دپیکا کیٹ واک کیلئے نئی لڑکیوں کو تربیت دینگی         وزیراعظم نواز شریف کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس         آئی پی ایل کے افتتاحی میچ میں کولکتہ نائٹ رائیڈرز نے ممبئی انڈینز کو 41 رنز سے رونددیا         مذاکراتی کمیٹیوں میں ملاقات جلد ہوگی،طالبان سے جنگ بندی کیلئے کہیں‌ گے،پروفیسر ابراہیم         بی جے پی لوگوں کو تقسےم کرکے حکومت کرنا چاہتی ہے، پرےانکا گاندھی         بھارت؛ پارلیمانی انتخابات کے پانچویں مرحلے کی پولنگ         ”ہم تو ڈوبے ہیں صنم تم کو بھی لے ڈوبیں گے“ :حافظ حسین احمد         سپیکرز کانفرنس کا مقصد صوبوں میں بھائی چارہ بڑھانا ہے         بدقسمتی سے ملک میں 17سال سے مردم شماری نہ ہو سکی: جسٹس فرخ عرفان         نیٹو انخلاءکے بعد افغانستان میں امن استور کی موجودگی ضروری‘مشاہد حسین         کسی صورت ملک کو جمہوریت کی پٹری سے نہیں اترنے دینگے : سراج الحق         وزیراعظم میری ماں کو واپس لانے کا وعدہ پورا کریں         حکومت اور فوج میں کوئی تناﺅ نہیں: پرویزرشید         گھر بیٹھے جیالے فعال کرنے سے ہی دما دم مست قلندر ہوگا: بلاول         پیپلزپارٹی کے سنیٹر فیصل رضا عابدی کا استعفیٰ ‘ سیاست سے بھی ریٹائر         مودی کا مسلم کش فسادات پر معافی مانگنے سے ایک بار پھر انکار         بجلی چوری ،پوائنٹ سکورنگ ہوئی تو معاملات سول وار کی طرف جائینگے:عابد شیر         حکومت اور اپوزیشن میں ملاقاتیں جمہوریت کا حسن کا ہیں ، گورنر پنجاب         جرمن ماڈل کلاڈیا سیزلا”دیسی کاٹے“ میں آئٹم سانگ کریں گی         افغانستان‘ بھارتی الیکشن کے نتائج خطے کا مستقبل واضح کر دینگے: منورحسن        
ڈرون حملے بند ہونے پر جنگ بندی کےلئے تیار ہیں --:حکیم اللہ مسعو د
لندن: کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ حکیم اللہ محسود کا کہنا ہے کہ میڈیا کے ذریعے حکومت سے مذاکرات نہیں ہوسکتے ،ڈرون حملے بند کئے جائیں تو جنگ بندی ہوسکتی ہے،برطانوی خبرساں ایجنسی کو انٹرویو میں حکیم اللہ محسود نے کہا کہ مذاکرات کیلئے سنجیدہ ہیں ،لیکن حکومت نے رابطہ نہیں کیا، ہم میڈیا کے ذریعے مذاکرات نہیں کرنا چاہتے ، انہوں نے کہا کہ ڈرون حملے بند ہونے تک جنگ بندی نہیں ہوسکتی ،حکیم اللہ محسود نے مزید کہا کہ حکومت کی جانب سے مذاکرات کیلئے کوئی سنجیدہ قدم نہیں اٹھایا گیا، آل پارٹیز کانفرنس کے بعد حکومت نے مذاکرات میڈیا کے حوالے کردیئے ،انہوں نے کہا کہ طالبان سنجیدہ مذاکرات کے قائل ہیں، اگر مذاکرات کیلئے کوششیں سنجیدہ ہوئی تو ہم بھی تیار ہیں، انہوں نے کہا کہ اگر کوئی حکومتی جرگہ مذاکرات کیلئے آئے گا تو اسے مکمل تحفظ فراہم کرینگے،حکیم اللہ محسود نے پاکستان میں پبلک مقامات پر دھماکوں سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان دھماکوں میں غیرملکی خفیہ ادارے ملوث ہیں،جن کا مقصد لوگوں کو طالبان سے بدظن کرنا ہے۔