روٹی مانگنے پر بھارتی فوج نے اپنے ہی فوجی کو سزا سنا دی
جموں (خصوصی رپورٹ) بھارتی سرحدی فوج بی ایس ایف کی ہائی کمان نے فیس بک ویڈیو میں ناقص کھانوں کی شکایت اور افسروں کی کرپشن کا بھانڈا پھوڑنے والے فوجی کا تبادلہ کر دیا۔ تیج بہادر یادیو کو کنٹرول لائن پر راجوڑی سیکٹر سے ہٹا کر بطور سزا پونچھ ہیڈکوارٹرز میں پلمبرنگ کی ڈیوٹی دی گئی ہے یعنی اب وہ نلکے ٹوٹیاں پائپ کھولے جوڑے گا اور فوجیوں کے بیت الخلاﺅں میں گھس کر خرابیاں دور کرے گا۔ واضح رہے کہ تیج بہادر یادیو نے گزشتہ روز اپنے فیس بک پیج پر کئی ویڈیوز اپ لوڈ کی تھیں جن میں اس نے دکھایا اور بتایا تھا کہ کنٹرول لائن پر شدید برفباری اور جما دینے والی سردی میں 12‘ 12 گھنٹے ڈیوٹی دینے والے فوجیوں کو ناشتے میں جلا ہوا پراٹھا اور آدھا کپ چائے ملتا ہے۔ دو چھوٹی چپاتیاں‘ دوپہر کو پانی جیسی پتلی اور بغیر مصالحوں والی دال کے ساتھ ملتی رات کو اکثر کھانے کے بغیر بھوکے پیٹ سونا پڑتا ہے۔ادھر بی ایس ایف اہلکار کی حمایت میں اس کی بیوی شرمیلا حکام کو دہائی دیتے ہوئے سامنے آ گئی۔ گزشتہ روز صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے شرمیلا نے کہا کہ روٹی مانگ کر اس کے شوہر نے کیا غلط کیا اس نے ملک کا کوئی قانونی نہیں توڑا وہ وطن کیلئے شدید سردی میں خدمات انجام دے رہا ہے ہمیں انصاف فراہم کیا جائے۔  

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا